Promote Deals

Promote Deals پاکستانی سیاست میں کیا ہورہا ہے ، جانئیے پروموٹ ڈیلز پر
(79)

City TILES
16/02/2020

City TILES

شاہ زیب خان ولد بلقیاز سکنہ نار شکراللہ بنوں گردے کا مریض ہے انتہائی غریب خاندان سے تعلق رکھتا ہے گھر کی جمع پونجی خرچ کر چکے ہیں صاحب استطاعت لوگ شاہ زیب کی مدد کو آگے بڑے۔
برائے رابطہ:03068075546
سب دوست بڑے بڑے گروپس میں شئیر کریں تا کہ اس بچے کو وقت پہ دوائی اور علاج مل سکے
پلیز شئیر یہ آپکا منتظر ہے 😭😭😭🙏🙏🙏

03/02/2020

پراپر سروس ہورہی ہے😂

11/12/2019

😂😂😂😂

08/12/2019
ملک میر عالم خان میرزعلی خیل (1854-1785 )۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔...
07/12/2019

ملک میر عالم خان میرزعلی خیل (1854-1785 )
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
ملک میر عالم خان ہمارے قبیلے کے اہم شخصیت و ہمارے دادا ملک شکراللہ خان کے چچازاد تھے۔ آپ 1785ء میں منڈان میں پیدا ہوئے۔آپ قبیلے میں اہم سماجی مقام رکھتے تھے۔ملک شکراللہ خان عملیت پسند اور دوررس سوچ کے مالک تھے اور صلح جو تھے جبکہ ملک میر عالم تند و تیز مزاج کے مالک تھے۔ انگریزوں کی آمد کے بعد دونوں چچا زاد بھائیوں کی اپروچ میں واضح فرق رہا۔ملک شکراللہ خان نے انگریز کے ساتھ مصلحت کی پالیسی اپنائے رکھی جب ملک میر عالم نے انگریزوں کے خلاف مزاحمت کا فیصلہ کیا۔دونوں خوانین کو نار کے علاقے میں ہزاروں کنال زمینیں دی گئیں ملک شکراللہ کو 6200 کنال زرخیز ترین زمین دی گئی۔1876 میں نہر کچکوٹ ان زمینوں کے وسط سے گزاری گئی ملک میر عالم کو بھی اتنی زمین دی گئی مگر انکی مزاحمت کی وجہ سے وہ زمین دوبارہ انگریز نے واپس لے لی۔علاقہ نار میں آج بھی دو بڑے علاقے ہمارے مشران کے نام ہیں۔نارشکراللہ جو آج کل ویلج کونسل کا درجہ رکھتا ہے اور نار میر عالم خان۔ ملک میر عالم خان کافی اثر و رسوخ کے حامل شخصیت تھے۔اس قدر بااثر تھے کہ جب انگریزوں نے اسکے خلاف کاروائیاں تیز کیں اور آپ افغانستان چلے گئے تو اس وقت کے افغانی بادشاہ نے انگریزوں کو پیغام بھِیجا کہ ملک میر عالم کے ساتھ نرمی کی جائے۔
منڈان میں جوجی کلہ کے ساتھ ملحقہ گاوں گڑھی میر عالم بھی آپ کے نام سے منسوم ہے۔ملک میر عالم نے ہزاروں کنال کی جائیدائیں قربان کیں مگر انگریز کے سامنے نہ جھکے۔آپ ہر اس آدمی کا ساتھ دیتے جو انگریزوں کے خلاف آپ کا ساتھ دیتے۔1854 ء میں آپ افغانستان میں خود ساختہ جلا وطنی کی صورت میں انتقال کر گئے اور وہی آسودہ خاک ہوئے۔

27/10/2019

ایک حیرت انگیز اور سبق آموز واقعہ
ابن عقیلؒ اپنا واقعہ لکھتے ہیں کہ میں بہت ہی زیادہ غریب آدمی تھا۔ ایک مرتبہ میں نے طواف کرتے ہوئے ایک ہار دیکھا جو بڑا قیمتی تھا۔ میں نے وہ ہار اٹھالیا۔ میرا نفس چاہتا تھا کہ میں اسے چھپالوں لیکن میرادل کہتا تھا، ہرگز نہیں، یہ چوری ہے، بلکہ دیانتداری کا تقاضا یہ ہے کہ جس کا یہ ہار ہے اسے میں واپس کر دوں۔ چنانچہ میں نے مطاف میں کھڑے ہو کر اعلان کردیا کہ اگر کسی کا ہار گم ہوا ہو تو آکر مجھ سے لے لے۔
کہتے ہیں کہ ایک نابینا آدمی آیا اور کہنے لگا کہ یہ ہار میرا ہے اور میرے تھیلے میں سے گرا ہے۔
میرے نفس نے مجھے اور بھی ملامت کی کہ ہار تو تھا بھی نابینا کا، اس کا کسی کو کیاپتہ چلتا، چھپانے کا اچھا موقع تھا مگر میں نے وہ ہار اسے دے دیا۔
نابینا نے دعا دی اور چلاگیا۔
کہتے ہیں کہ میں دعائیں بھی مانگتاتھا کہ اللہ! میرے لیے کوئی رزق کا بندوبست کردے۔
اللہ کی شان دیکھیں کہ میں وہاں سے ’’ہلہ‘‘ آ گیا۔ یہ ایک بستی کانام ہے۔ وہاں کی ایک مسجد میں گیاتو پتہ چلا کہ چند دن پہلے امام صاحب فوت ہو گئے تھے۔ لوگوں نے مجھے کہا کہ نماز پڑھا دو۔ جب میں نے نماز پڑھائی تو انہیں میرا نماز پڑھانا اچھا لگا۔ وہ کہنے لگے، تم یہاں امام کیوں نہیں بن جاتے۔ میں نے کہا، بہت اچھا۔ میں نے وہاں امامت کے فرائض سرانجام دینے شروع کردیے۔ تھوڑے دنوں کے بعد پتہ چلا کہ جو امام صاحب پہلے فوت ہوئے تھے ان کی ایک جواں سال بیٹی ہے۔ وہ وصیت کر گئے تھے کہ کسی نیک بندے سے اس کا نکاح کر دینا۔ مقتدی لوگوں نے مجھ سے کہا، جی اگر آپ چاہیں تو ہم اس یتیم بچی کا آپ سے نکاح کر دیتے ہیں۔ میں نے کہا، جی بہت اچھا، چنانچہ انہوں نے اس کے ساتھ میرا نکاح کر دیا۔شادی کے کچھ عرصہ کے بعد میں نے اپنی بیوی کو دیکھا کہ اس کے گلے میں وہی ہار تھا جو میں نے طواف کے دوران ایک نابینا آدمی کو لوٹایا تھا۔اسے دیکھ کر میں حیران رہ گیا۔میں نے پوچھا، یہ ہار کس کا ہے؟ اس نے کہا، یہ میرے ابو نے مجھے دیا تھا۔میں نے کہا، آپ کے ابو کون تھے؟اس نے کہا، وہ عالم تھے، اس مسجد میں امام تھے اور نابینا تھے۔تب مجھے پتہ چلا کہ اس کے ابو وہی تھے جن کو میں نے وہ ہار واپس کیاتھا۔ میں نے اس کو بتایا کہ یہ ہار تو میں نے ان کو اٹھا کر دیا تھا۔ وہ کہنے لگی کہ آپ کی بھی دعا قبول ہو گئی اور میرے ابو کی بھی دعا قبول ہوگئی۔میں نے کہا، وہ کیسے؟ اس نے کہا کہ آپ کی دعا تو اس طرح قبول ہوئی کہ اللہ تعالیٰ نے آپ کو گھر بھی دیا، گھر والی بھی دی اور رزق بھی دیا اور میرے ابو کی دعا اس طرح قبول ہوئی کہ جب وہ ہار لے کر واپس آئے تو وہ دعا مانگتے تھے کہ اے اللہ! ایک امین (دیانت دار) شخص نے میرا ہار مجھے لوٹایا ہے، اے اللہ! ایسا ہی امین شخص میری بیٹی کے لیے خاوند کے طور پر عطا فرما دے۔ اللہ نے میرے باپ کی دعا بھی قبول کر لی اور آپ کو میرا خاوند بنا دیا۔۔۔ تو مخلص بندے کا کام اللہ تعالیٰ کبھی رکنے نہیں دیتے، اٹکنے نہیں دیتے بلکہ اس کی کشتی ہمیشہ کنارے لگا دیاکرتے ہیں...

10/10/2019
نیو یارک میں کشمیریوں کا عالمی ضمیر کو جھنجھوڑنے کے لئے احتجاجاگر تھوڑی سی بھی انسانیت باقی ہے تو اس تصویر کو زیادہ سے ز...
06/10/2019

نیو یارک میں کشمیریوں کا عالمی ضمیر کو جھنجھوڑنے کے لئے احتجاج
اگر تھوڑی سی بھی انسانیت باقی ہے تو اس تصویر کو زیادہ سے زیادہ شیئر کریں

18/08/2019
18/08/2019
سوشل میڈیا والوپانچ سالہ اویس خان کی اواز بنکر انصاف کےلیے اتنا اواز اٹھاو کہ عمران خان خود ایکشن لیں۔باقی کسی سے خیر کی...
18/08/2019

سوشل میڈیا والو
پانچ سالہ اویس خان کی اواز بنکر انصاف کےلیے اتنا اواز اٹھاو کہ عمران خان خود ایکشن لیں۔باقی کسی سے خیر کی توقع نہی

People Of Peshawar
17/08/2019

People Of Peshawar

127 لڑکیوں کو ریپ کرنےاور ویڈیو بنانے والاجوڑا میاں بیوی گرفتار
کم عمر لڑکیوں کو اغواہ کے بعد ریپ کا دل دہلا دینے والا واقعہ منظر عام پر آگیا۔۔۔127 لڑکیوں کو ریپ کے بعد ویڈیوز بناکر پورن سائٹ کو فروخت کرنے والا جوڑا پکڑا گیا۔۔

تعلیمی اداروں و گلی محلوں سے نوجوان طالبات و کم عمر لڑکیوں کو بہلا پھسلا کے اغواء بعد ریپ اور اور اس شیطانی کھیل کی ویڈیوز بین الاقوامی Porno Site کو بھاری معاوضے عوض فروخت کرنے والا جوڑا بلاآخر پولیس کے ہتھے چڑھ گیا

*خاوند گلستان کالونی میں واقع کوٹھی میں لڑکیوں ساتھ زبردستی جنسی فعل کرتا جبکہ بیوی موبائل فون میں اس مکروہ عملی کی ویڈیوز بناتی تھی*

*متاثرین میں آٹھ سے بارہ سال کی عمر تک کی معصوم لڑکیاں کی شامل*

*سات ماہ کے دوران ملزم نے 127 سے زائد لڑکیوں ساتھ ریپ کیا اور اسکی بیوی نے ویڈیوز بنا کر بیرون ملک فروخت کیں*

*تفتیش کاروں نے ملزمان کے موبائل فونز سے تمام ویڈیوز برآمد*
گوجرخان

تفصیلات کے مطابق تھانہ سٹی کے اہلکاروں نے ایک کاروائی کے دوران گجر خان نے تعلق رکھنے والے ایک جوڑے کو “بھائی بہن”
بنکر گورنمنٹ گورڈن کالج باہر سے شادی شدہ نوجوان طالبہ کو بہلا پھسلا کر اغواہ کرنے کے بعد ریپ اور اس مکرو فعل کی موبائل فونز میں ویڈیو بنا کر ایک بین الاقوامی پورن سائٹ کے ہاتھوں بھاری معاوضے عوض فروخت کرنے کے جرم میں گرفتار کر لیا۔

جوڑے کی شناخت قاسم جہانگیر ولد سعید جہانگیر
بنکر سکالجز، یونیورسٹیوں اور گلی و محلہ سے نوجوان طالبات و کم عمر لڑکیوں کو اغواہ کے بعد ریپ کر کے اس شیطانی کھیل کی موبائل فونز میں ویڈیو ز بنا کر بین الاقوامی پورنو ویب سائیٹ کے ہاتھوں بھاری معاوضے عوض فروخت کرنے کے جرم میں گرفتار کر لیا۔

پولیس نے اغواہ اور زناء نے دفعات تحت ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا جبکہ ملزمان کی شناخت قاسم جہانگیر ولدجہانگیر سعید اور کرن زوجہ قاسم سعید سکنہ متوا ، ڈھوک حبیب کینال ، مندرہ تحصیل گجر خان سے ہوئی ہے۔
زرائع کے مطابق تھانہ سٹی کو سنبل جمیل زوجہ یاسر مصطفی سکنہ وقار النساء کالج، جہانگیر روڈ نے درخواست دی کہ میں علامہ اقبال اوپن یونیورسٹی میں MSc Economics (Semester II) کی طالبہ ہوں مورخہ 3 اگست میں گورنمنٹ گورڈن کالج میں ورکشاپ میں شرکت بعد شام چھ بجے گھر جانے لیے میں گیٹ پر آئی تو نقاب پہنے ایک لڑکی میرے قریب آئی اور خود کو سٹوڈنٹ ظاہر کرتے ہوئے مجھ سے بات چیت کرنے لگی اور پوچھا کہاں جانا ہے جس پر میں نے اسے بتایا ٹیپو روڈ تو وہ بولی میں نے بھی ادھر ہی جانا ہے اور میرا بھائی اپنی گاڑی میں آرہا ہے تم بھی میرے ساتھ بیٹھ جانا۔ مدعیہ کے مطابق اتنی دیر میں ان کے پاس گرے رنگ کی گاڑی VW-789 رکی اور ایک مرد باہر آیا۔ مدعیہ کے مطابق وہ گاڑی پاس کھڑی تھی کہ لڑکی نے اسے دبوچ کیا اور گاڑی کی پچھلی سیٹ پر دھکیل دیا اور خود بھی ساتھ بیٹھ گئی جبکہ مرد نے فٹا فٹ گاڑی سٹارٹ کی۔ مدعیہ کے مطابق لڑکی نے گاڑی کے شیشوں پر کالے رنگ کے پردے گرائے اور خنجر نکال کر اسے دھمکی دی کہ شور مت مچانا ورنہ جان سے مار دوں گی۔ مدعیہ کے مطابق سے گلستان کالونی لین نمبر 3 غفار سٹریٹ میلاد چوک میں واقع ایک گھر میں لے جایا گیا جہاں مرد نے اس ساتھ زبردستی جنسی زیادتی کی جبکہ لڑکی نے موبائل فون میں اس کی ویڈیو اور تصویر بنائیں اور اسے دھمکی دی کی اپنا منہ بند رکھنا ورنہ تمھارے پورے خاندان کو ختم کر دیں گے۔ مدعیہ مطابق اسے مرد رات نو بجے اپنی گاڑی میں ٹیپو روڈ چھوڑ کر فرار ہو گیا۔ پولیس نے ملزمان خلاف زیر دفعات 376/365 ت پ مقدمہ درج کیا اور تفتیش شروع کر دی۔

مقدمہ کے تفتیشی افسر ٹرینی ایس آئی عقیل راٹھور نے مدعیہ کی نشاندھی پر مزکورہ مکان پر چھاپہ مار کر جوڑے کو گرفتار کر لیا اور تھانے منتقل کر دیا۔ زرائع کے مطابق ابتدائی طور پر تھانہ کے مہتمم نے اس کیس کو “جعلی ریپ کیس” کے طور پر لیا
اور جوڑے کو علاقہ مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کر کے قاسم جہانگیر کا چار روزہ جسمانی ریمانڈ حاصل کیا جبکہ اسکی بیوی کرن کو چودہ روزہ جیوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھیج دیا۔

زرائع کے مطابق تھانہ سٹی میں تعینات فرنٹ ڈیسک انچارج نے ملزمان کے موبائل فونز کو جب ڈی کوڈ کر کے ڈیٹا چیک کیا تو اس کو خفیہ فائلز میں سٹور لاتعداد ریپ کی ویڈیوز اور قابل اعتراض تصاویر ملیں جو فوری طور پر مہتمم اور تفتیشی افسر راٹھور کے نوٹس میں لائی گئیں۔
سی پی او فیصل رانا نے اس پہ موقف دیتے ہوئے کہا کہ
وقوعہ کا مقدمہ تھانہ سٹی میں اغواء اور زیادتی کی دفعہ کے تحت درج تھا ملزم قاسم عدالت سے جسمانی ریمانڈ پر ہے جبکہ اس کی اہلیہ ملزمہ کرن محمود جوڈیشل ریمانڈ پر جیل بھجوائی جا چکی ہے

ملزم میاں بیوی اب تک 45 لڑکیوں کو اپنی ہوس کا نشانہ بنا چکے ہیں

ملزمان زیادتی کا نشانہ بنانے والی بچیوں کی برہنہ ویڈیوز بھی بناتے تھے

،ملزمان سے 10 واقعات کی برہنہ ویڈیوز اورہزاروں برہنہ تصاویر بر آمد کر لی گئی ہیں
ایم ایس سی کی طالبہ شادی شدہ لڑکی سے زیادتی کے مقدمہ میں بیڈ شیٹ اور ٹشو پیپرز ڈی این اے ٹیسٹ کے لئے بجھوائے گئے ہیں،
ایس پی راول کوملزم کی ہوس کا نشانہ بننے والی تمام بچیوں کے والدین سے رابطہ کرنے کی ہدائت جاری کی گئی ہیں
ہر وقوعہ کی الگ الگ ایف آئی آر درج کر کے ملزمان کو الگ الگ چالان کیا جائے گا

ان معاشرتی ناسوروں کو قانون کی مطابق عبرتناک سزا دلوائی جائے گی تاکہ کسی کو حوا کی بیٹی سے زیادتی اور بلیک میل کرنے کی سوچ بھی نہ آئے،،سی پی او کی ہدایت۔
منقول ثاقب رحمان

آج عمران خان نے وہ تقریر کی جو میں عرصہ دراز سے چاہتا تھا کہ میرا وزیر اعظم کر ے۔ زندہ باد میرے پیارے وزیر اعظم!
14/08/2019

آج عمران خان نے وہ تقریر کی جو میں عرصہ دراز سے چاہتا تھا کہ میرا وزیر اعظم کر ے۔ زندہ باد میرے پیارے وزیر اعظم!

13/08/2019

منڈان قبیلے نے آج 5 بجے تک بجلی لوڈشیڈنگ اور آنکھ مچولی ختم نہ کرنے کی صورت میں گریڈسٹیشن کے گھیراؤ کی دھمکی دیدی

Address

Islamabad
10007

Alerts

Be the first to know and let us send you an email when Promote Deals posts news and promotions. Your email address will not be used for any other purpose, and you can unsubscribe at any time.

Videos

پاکستانی سیاست

پاکستانی سیاست میں کیا ہورہا ہے ، جانئیے پروموٹ ڈیلز پر

Nearby media companies


Other News & Media Websites in Islamabad

Show All

Comments

“كن شامخاً مستقيماً للتركة أثراً لا تزيله رياح النسيان “ “