دستک Dastak

دستک Dastak ناانصافی کے خلاف۔انصاف کیلئےدستک ظلم کے خلاف۔امن کیلئے دستک جہالت کے خلاف۔شعور کیلئےدستک

آزاد کشمیر کی تاریخ میں پہلی مرتبہ۔۔۔ایک نئے عزم اور حوصلے کے ساتھ۔۔ دستک کیا ہے؟ پہلی مرتبہ پرنٹ ،الیکٹرانک اور سوشل میڈیامعاشرے کی حقیقی معنوں میں خدمت کے لیے ایک مقام پر یکجا نظر آئیں گئے انصاف پر مبنی معاشرے کی تشکیل کیلئے ایک غیر سیاسی پلیٹ فارم دستک کی نمائندگی کون کر رہا ہے؟ تمام مکتبہ فکر کے وہ لوگ جو کسی بھی علاقائی و مسلکی تعصب سے بالاتر ہو کر متوازن ، غیر طبقاتی او رانصاف پر مبنی نظام کیلئے پر امن جدوجہد کی خواہش رکھتے ہوں دستک کے اغراض ومقاصد کیا ہیں؟ ٭نا انصافی،میرٹ کی پائمالی ،ظلم اور جبر کے خلاف صدائے احتجاج بند کرنا ارباب اختیار کے ساتھ مذاکرات اور مذاکرات میں ناکامی پر پر امن احتجاج ٭میرٹ کی خلاف ورزی کرپشن ، غیر ذمہ داررویوںکیخلاف شعور بیداری مہم ٭وسائل پر عوام کے حق ملکیت کو تسلیم کرتے ہوئے اسے عوام کیلئے منافع بخش بنانے کیلئے جدوجہد ٭قدرتی ماحول کے بقاءکیلئے تمام تر متعلقہ اداروں کو مشاورت اور خلاف ورزی پر مثبت کردار ادا کرنا ٭تعلیم ، صحت، پینے کے صاف پانی کے معاملہ میں عوام اور ارباب اختیار کو برابری کی بنیاد پر تسلیم کئے جانے اور اس پر عمل کیلئے جدوجہد کرنا ٭اطلاعات تک عام آدمی کی رسائی کیلئے اپنا کردار ادا کرنا غیر طبقاتی نظام ، انصاف پر مبنی معاشرے کی تشکیل کیلئے احترام اور برداشت کے ساتھ جدوجہد دستک کے ساتھ رنگ،نسل،زبان،قوم اور تمام تر تعصبات سے بالائے طاق ہو کر انسانیت کی خدمت کو اولین ترجیح دینا عوام بطور خاص نوجوان نسل کو ذہنی،فکری،شعوری اور ہر قسم کی غلامی اور احساس کمتری سے نکال کر اپنے پاوں پر کھڑا کرنے کی ترغیب دینا دستک (صرف خدا کی خوشنودی کیلئے) ناانصافی کے خلاف۔انصاف کیلئےدستک ظلم کے خلاف۔امن کیلئے دستک جہالت کے خلاف۔شعور کیلئےدستک.

Mission: انصاف اور مساوات پر مبنی معاشرے کا قیام

07/02/2020
AJK Television

آزاد کشمیر ٹیلی ویژن کے پروگرام
آئینہ سماج
میں میزبان ابراہیم گل اور محترم
عارف عرفی صاحب کے ہمراہ آزاد کشمیر میں رونما ہونے والی موسمیاتی تبدیلیوں، عوامی اور حکومتی کردار ،مستقبل کے چیلنجز سے نمٹنے کیلئے مربوط حکمت عملی سمیت دیگر مسائل پر گفتگو کی گئی

آزاد کشمیر ٹیلی ویژن کا پروگرام آئینہ سماج میں ماحولیاتی تبدیلیاں اور ہم

میں کس کے ہاتھ پر اپنا لہو تلاش کروں؟؟؟۔۔۔کیا کسی نے سوچنے کی زحمت گوارا کی کہ نوسیری سے چھتر کلاس تک لاکھوں انسانوں، آب...
12/10/2017

میں کس کے ہاتھ پر اپنا لہو تلاش کروں؟؟؟
۔۔۔
کیا کسی نے سوچنے کی زحمت گوارا کی کہ نوسیری سے چھتر کلاس تک لاکھوں انسانوں، آبی حیات اور قدرتی ماحول کا کیا بنے گا
اپنے جائز حقوق کی بات کرنے والوں " غدار" کہہ کر کب تک خاموش کیا جاتا رہے گا؟
کہاں ہیں مظفرآباد کے والی وارث، ووٹ لینے والے ، بھیک مانگنے والے
نیلم بھی چلا گیا اب جہلم کا رخ بھی تبدیل کر دیا جائے گا
مظفرآباد اور گردو نواح میں بسنے والے لاکھوں باسیوں کا کیا بنے گا؟
چائینز کمپنیوں اور واپڈہ کی جی حضؤری کرنے والوں نے تو بحریہ ٹاون میں میں شفٹنگ کی مکمل تیاری کر رکھی ہے ، غریب کہاں جائے گا؟
کسے وکیل کریں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ کس سے منصفی چاہیئں؟؟؟

معاشرتی ناسوروں کے خلاف جہاد
20/06/2017

معاشرتی ناسوروں کے خلاف جہاد

توجہ طلب
11/05/2017

توجہ طلب

نیشنل ایکشن پلان صرف مساجد،امام بارگاہوں،دینی مدارس اور غریب افراد کے لیے ہی رہ گیا۔۔۔طاقت ور پر ہاتھ کون ڈالے گا؟
29/10/2016

نیشنل ایکشن پلان صرف مساجد،امام بارگاہوں،دینی مدارس اور غریب افراد کے لیے ہی رہ گیا۔۔۔طاقت ور پر ہاتھ کون ڈالے گا؟

مظفرآباد(نصیر چوہدری سے )ازاد ریاست جموں و کشمیر میں میرٹ ، انصاف اور گڈ گورننس کا جنازہ نکل گیا ۔وزیراعظم آزادکشمیر کے ...
10/10/2016

مظفرآباد(نصیر چوہدری سے )
ازاد ریاست جموں و کشمیر میں میرٹ ، انصاف اور گڈ گورننس کا جنازہ نکل گیا ۔وزیراعظم آزادکشمیر کے احکامات بیورو کریسی نے ماننے سے انکا کر دیا محکمہ لوکل گورنمنٹ میں الیکشن کے تیسرے روز تعینات ہونیوالے سیکرٹری مالیات کے فرزند کو الیکشن کے دوران ہونیوالی تقرریوں کی منسوخی اور پھر وزیراعظم کے احکامات کے باوجود کوئی برطرف نہ کر سکا خلاف میرٹ 17سکیل میں اکاونٹ آفیسر بھرتی ہونیوالے سیکرٹری مالیات کے بیٹے حامد صادق کی تعیناتی کا نوٹیکفیشن عام انتخابات کے تیسرے روز جاری کیا گیا وزیراعظم آزادکشمیر اپنے احکامات پر عملدرآمد اور خلاف میرٹ بھرتی ہونیوالے بیورو کریٹ کے لاڈلے کو برطرف کر سکیں گے یا نہیں سوال عوامی حلقوں میں موضوع بحث بن گیا ،چیف الیکشن کمشنر کی جانب سے الیکشن کے دوران لگائی گئی پابندی کو پاؤں کے نیچے روندتے ہوئے یہ تقرری کی گئی تھی لوگوں کی یہ امید تھی کے نئی حکومت اس کو ضرور منسوخ کرے گی مگر حکومت کے لیئے سیکرٹری مالیات بھاری ثابت ہوئے ،تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم راجہ فاروق حیدر خان نے حلف اٹھاتے ہی یہ حکامات جاری کیئے کے الیکشن کے دوران جتنی بھی تقرریاں ہوئی تمام منسوخ کی جاتی ہیں ،سروسز سے نوٹیفکشن بھی جاری ہوا مگرمحکمہ لوکل گورنمنٹ کا قلمدان وزیر اعظم کے پاس ہوتے ہوئے بھی عملدارمد نہ ہو سکا الیکشن کے تیسرے روز سیکرٹری مالیات ملک صادق کے بیٹے حامد صادق کی لوکل گونمنٹ بورڈ سکیل 17میں تمام تر پابندیوں کے باجودتقری کی گئی جو تاحال منسوخ نہ سکی حامد صادق ملک بجٹ افیسر بی 17لوگونمنٹ بورڈ کی اسٹنٹ ڈائریکٹر اکاونٹس بی 17 لوکل گونمنٹ ودہی ترقی میں الیکشن کے تیسرے روز 25جولائی کو تقری کی گئی ،9جولائی سابق وزیر لوکل گونمنٹ چوہدری یاسین سے فائل پر دستخط کروائے گے 16جولائی کو جعلی سلکشن بورڈ بنایا گیا اور الیکشن کے تیسرے روز 25جولائی کوالیکشن کمشنر کی حکامات کو ہوا میں اوڑاتے ہوئے تقری کی گئی ،وزیر اعظم آزاد کشمیر نے حلف اٹھاتے ہی دوارن الیکشن تمام تقرریاں تو منسوخ کی مگر محکمہ لوکل گونمنٹ جس کا قلمدان وزیرعظم کے اپنے پاس ہوتے ہوئے بھی عملدارمد نہ ہو سکا سیکرٹری مالیات کے بیٹے حامد صادق کو بیورو کریسی نے کشمیر انسیٹیوٹ میں کورس پر بھیج دیا گیا سیکرٹری مالیات کے زور پر بیوروکریسی نے وزیر اعظم کی گڈ گورنس میرٹ کی بلادستی کا جنازہ نکال دیا

09/09/2016
kashmiri student protest and hunger strike

kashmiri student protest and hunger strike
مظفرآباد
مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم کا شکار بچوں سےیکجہتی کے اظہار اور عالمی برداری کی توجہ بھارتی ریاستی دہشت گردی کی جانب مبندول کرانے کے لیے مظفرآباد بچوں نے اجتماجی ریلی نکالی اور مظاہرہ کیا۔
چلڈرن اسمبلی کے زیر اہتما م مظفرآباد میں نیلم اسٹیڈیم سے نکالی گی ریلی میںشریک نجی سکول کے بچوں نے
ٓبھارت کے خلاف نعرے لگائے ریلی میں شریک بچوں نے ،بچوں پر بھارتی مظالم کو بے نقاب کرنے کے لیے بچوں کی تصویر یں اور کتبے اٹھارکھے تھے پل پر پہنچ کر بچوں نے یہ نغمہ ہمیں زندہ رہنے دو ہمیں ہنستے رہنے دو گاکر کشمیری بچوں پر بھارتی افواج کی بربریت پراقوام عالم باالخصوص انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والی تنظیموں کی توجہ مبندول کروائی ریلی مرکزی ایوان صحافت مظفرآباد پہنچ کر احتجاجی مظاہرے میں تبدیل ہو گی اس موقع پر نجی سکول کے بچوں نےلنچ بکس جمع کر کے علامتی بھوک ہڑتال کی اور کنٹرول لائن کی دوسری جانب بھارتی درندگی کا شکار بچوں سے یکجہتی کا اظہار کیا مظاہرین نے خطاب کرتے ہوئے مقررین 63 دن سے مقبوضہ کشمیر میں کرفیو نافد ہے کشمیریوں نے کشمیر کی طاقت کے ذریعہ حاصل کرنے کے لیے مودی کا غرور خاک میں ملا دیا ہے مقررین نے بھارتی تحسین پیش کرتے ہوئے عالمی برداری سے مطالبہ کیا کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اور ریاستی دہشت گردی بند کروائیں

مظفرآبادلائن آف کنٹرول پر واقع وادی نیلم کے علاقے کیل میدان میں غریب گھرانے کی جواں سالہ لڑکی کواس کے انسان نما وحشی درن...
04/09/2016

مظفرآباد
لائن آف کنٹرول پر واقع وادی نیلم کے علاقے کیل میدان میں غریب گھرانے کی جواں سالہ لڑکی کواس کے انسان نما وحشی درندے شوہر نے دوسری شادی کی راہ میں رکاوٹ بننے پر ویران جنگل میں لے جا کر کلہاڑیوں کے وار کر قتل کر دیا،ظالم شوہر نے قتل کرنے کے بعد بیوی کے مردہ جسم کو پھانسی دینے کے ساتھ مبینہ طور پر نازک حصے کاٹ کر اسے آگ لگا دی۔علاقے کے نام نہاد شرفا کا جرگہ اور مثالی پولیس بھی قاتلوں سے مل گئی مقتولہ کے ورثا سے سادہ کاغذ پر دستخط کروا کر واقعے کو دبانے کی ناکام کوشش،لڑکی تمہاری چلی گئی اب اپنا منہ بند رکھو ورنہ سب کے خلاف ایف آئی آر درج کر دیں گے پولیس کے اس ظالمانہ سلوک نے انسانیت کو بھی شرما دیا۔14اگست کو کیل میںقتل ہونے والی آ منہ کی ڈیڑھ سال قبل شادی ہوئی تھی اور اسکی چھ ماہ کی بچی کو بھی ماں کی ممتا سے محروم کر دیا گیا۔ قاتل بدستور آزاد ،قانون اور انصاف کا منہ چڑا رہے ہیں .تفصیلات کے مطابق ضلع نیلم کے لائن آف کنٹرول پر واقعہ علاقے کیل میدان کی رہائشی آمنہ بی بی کی شادی محمد رفیق ولد محمد یوسف سے ڈیڑسال قبل شادی ہوئی تھی اور اب انکی ایک چھ ماہ کی بچی بھی موجودتھی اسی دوران محمد رفیق کا علاقے کی ایک اور خاتون کے ساتھ مبینہ طور پر کوئی چکر چل رہا تھا اور اس نے یہ شرط رکھی تھی کہ وہ اپنی پہلی بیوی کوطلاق دے تو اسی صورت میں شادی ہو سکتی ہے ،مبینہ قاتل نے مہر کی رقم اور جہیز کے سامان کی واپسی کے خوف سے آمنہ بی بی کو راستے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا اور اسے دوردراز جنگل میں اپنے ساتھ لے گیا اور پھر موقع پاتے ہی اس پر کلہاڑیوں کے وار کر دئیے جس سے وہ زمین پر گر گئی اور اس نے تڑپنا شروع کر دیا ظالم نے اسی پر بس نہیں کیا بلکے اس کے گلے میں رسی کا پھندہ بنا کر اسے ایک درخت سے لٹکا کر پھانسی بھی دے ڈالی،اور اسکے بعد اسکے جسم کے نازک حصے بھی کاٹ ڈالے۔مقامی ذرائع کے مطابق تین روز تک نعش جنگل میں پڑی رہی اور جب اس کی گمشدگی کا شور مچا تو اسکے ظالم شوہر نے اپنے ساتھیوں سے ملکر اس کی نعش کو قریبی نالہ نریل میں پھینک دیا ۔اس نعش نالہ نریل میں بہہ کر کیل ہائیڈرل پاور کے ان ٹیک میں پھنسی ہوئی تھی اور وہ مکمل طور پر برہنہ حالت میں تھی اور مقامی لوگوں نے اس نعش کو پانی سے نکال کر اس کے ورثہ کے حوالے کیا۔اس دوران جب پولیس کو اطلاع ملی تو انھوں نے بجائے قاتل کو گرفتار کرنے کے مقتولہ کے غریب ورثا پر دباو ڈالنا شروع کر دیا۔علاقے میں اسی دوران ایک جرگہ بھی منعقد کیا گیا جہاں چوہدری خان ولی نامی شخص نے خطیر رقم کے عوض مقتولہ کے ورثا سے سادہ کاغذ پر دستخط کروا کہ یہ تحریر لکھی کہ آمنہ بی بی کی موت پاوں پھسلنے سے ہوئی جب کہ دوسری جانب آمنہ بی بی کی نعش کو غسل دینے والی خواتین نے بتایا کہ اس کے جسم پر کلہاڑیوں کے وار کیے گئے اور اسکے گلے میں رسی ڈال کر پھانسی دی گئی جس کے واضع نشانات موجود تھے۔لیکن پیسوں کی چمک دمک کے سامنے پولیس نے گھٹنے ٹیک دیئے اور ایک غریب بچی کے قاتل کو نہ صرف گرفتار نہ کیا جا سکا بلکے اس کے لواحقین کو اس بات کا سختی کے ساتھ پابند بنایا گیا کہ اگر کسی کے سامنے زبان کھولی تو کسی کو بھی زندہ نہیں چھوڑیں گئے۔مقتولہ کے ورثا کو اندھیرے میں رکھ کر انھیں بظاہر یہ تاثر دیا گیا کہ قاتل گرفتار ہے اور انھیں انصاف ملے گا۔انسانی حقوق کی تنظیموں اور ریاست کے درد دل رکھنے والے باسیوں نے حکومت ،انتظامیہ اور چیف جسٹس سے اس واقعے کا فوری نوٹس لینے کی اپیل کی ہے اور مطالبہ کیا ہے کہ اس واقعے کوٹیسٹ کیس کے طور پر لیا جائے اور پولیس کے جو اہلکار اس میں ملوث ہیں سب سے پہلے انکی گرفتاری عمل میں لائی جائے اور مقتولہ آمنہ کو حقیقی معنوں میں انصاف مہیا کیا جائے۔

مقابل ہے آئینہ
04/09/2016

مقابل ہے آئینہ

حق
22/08/2016

حق

احتجاج
22/08/2016

احتجاج

Timeline Photos
09/07/2016

Timeline Photos

یہاں انسانیت کی بات کرنا جرم ہے۔۔۔۔۔
05/06/2016

یہاں انسانیت کی بات کرنا جرم ہے۔۔۔۔۔

پارسا۔۔۔۔۔۔۔۔۔
20/05/2016

پارسا۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ہم سب ایک ہیں
17/05/2016

ہم سب ایک ہیں

ہم کرپٹ حکمرانوں کو ووٹ کیوں دیتے ہیں؟
11/05/2016

ہم کرپٹ حکمرانوں کو ووٹ کیوں دیتے ہیں؟

تبدیلی۔۔۔۔۔۔۔
06/05/2016

تبدیلی۔۔۔۔۔۔۔

غلام۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
28/04/2016

غلام۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ناکارہ قوم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
27/04/2016

ناکارہ قوم۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

انسانیت۔۔۔۔۔
25/04/2016

انسانیت۔۔۔۔۔

ہیٹ سٹروک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور احتیاطی تدابیر
25/04/2016

ہیٹ سٹروک۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔اور احتیاطی تدابیر

پاکستان کا مجموعی قرضہ 180 کھرب روپے سے تجاوز کر گیا ہے۔http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2016/04/160420_pakistan_externa...
21/04/2016
پاکستان کا مجموعی قرضہ 18 ہزار ارب روپے سے تجاوز کر گیا - BBC Urdu

پاکستان کا مجموعی قرضہ 180 کھرب روپے سے تجاوز کر گیا ہے۔
http://www.bbc.com/urdu/pakistan/2016/04/160420_pakistan_externat_debts_sr

وزارتِ خزانہ نے پاکستان کے ایوان بالا یعنی سینٹ کو بتایا ہے کہ پاکستان کا مجموعی قرضہ 180 کھرب روپے سے تجاوز کر گیا ہے۔مجموعی غیر ملکی قرضہ 55 کھرب روپے سے زائد ہے جبکہ مقامی قرضوں کی مد میں 131 ارب روپے ادا کرنے ہیں۔

جاگو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خدا کے لیے
21/04/2016

جاگو۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔خدا کے لیے

برائے فروخت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
17/04/2016

برائے فروخت۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

تربیت کا درست انداز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
15/04/2016

تربیت کا درست انداز۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

صدقہ جاریہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
15/04/2016

صدقہ جاریہ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

پورا بیان پڑھ کر اپنی رائے کا اظہار کریں۔۔۔۔۔
06/04/2016

پورا بیان پڑھ کر اپنی رائے کا اظہار کریں۔۔۔۔۔

SAFE Foundation Kashmir
04/04/2016

SAFE Foundation Kashmir

دیوار مہربانی- بسم اللہ چوک، صابر شہید ہائی سکول راولاکوٹ۔

17 years old girl killed in Jacobabad  Sindh on her wedding night for not proven virgin.
02/04/2016

17 years old girl killed in Jacobabad Sindh on her wedding night for not proven virgin.

لاجواب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
02/04/2016

لاجواب۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

لاہور کے اس وکیل کی تفصیلات جس نے اپنے کتے کو تازہ ہوا کی فراہمی کے لیے ملازمہ کو ساتھ بٹھا دیا۔ جانور بھی اپنے ہم نفسوں...
01/04/2016

لاہور کے اس وکیل کی تفصیلات جس نے اپنے کتے کو تازہ ہوا کی فراہمی کے لیے ملازمہ کو ساتھ بٹھا دیا۔ جانور بھی اپنے ہم نفسوں کے ساتھ ایسا سلوک نہیں کرتے۔ یہ وکیل صاحب تو جانوروں سے بھی بدتر نکلے۔ کوئی ہے جو انھیں جانتا ہو اور انھیں کچھ انسانیت کی خبر دے

مظفرآبادآزادکشمیر میں بین الاقوامی نوعیت کا حامل آزادجموں و کشمیر مرکز براے محفوظ انتقال خون تھیلیسیمیا سمیت دیگر مہلک ا...
01/04/2016

مظفرآباد
آزادکشمیر میں بین الاقوامی نوعیت کا حامل آزادجموں و کشمیر مرکز براے محفوظ انتقال خون تھیلیسیمیا سمیت دیگر مہلک امراض میں مبتلا مریضوں کے میں ایک خون کے عطیے کو تین مریضوں کے لیے کار آمد بنانے کی سہولت موجودپاکستان بھر کے اندر پہلا بین الاقوامی معیار کے حامل سنٹر نے کام شروع کر دیا تاہم آزادکشمیر بلڈ ٹرانفوژن اتھارٹی کا قیام تیرہ سال قبل عمل میں لایا گیا تاہم ابھی تک اسے باقاعدہ فعال نہیں بنایا جا سکا غیر محفوظ انتقال خون کے باعث سینکڑوں مریض موذی امراض میں مبتلا ہو گئے تا حال انسانی خون کو مصنوعی طریقے سے دنیاکی کسی بھی لیبارٹری میںتیار نہیں کیا جا سکا امبور کے مقام پر قائم مرکزی سروس براے محفوظ انتقال کی پروگرام منیجر ڈاکٹر ارم گیلانی نے صحافیوں کے دورہ کے موقع پر بریفنگ دیتے ہوے کہا کہ نتقال خون سے قبل عطیہ خون کو مریض کے لیے محفوظ بنانے کی غرض سے مختلف مراحل سے گزارا جاتا ہے ۔ اس غرض سے ”آزاد جموں و کشمیر قانون برائے محفوظ انتقال خون 2003ئ“ کے تحت ”آزاد جموں و کشمیرمرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “ کا قیام عمل میں لایا گیاانہوں نے کہا کہ آزاد جموں و کشمیرمرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “ واقع عباس انسٹیٹیوٹ آف میڈیکل سائنسز (ایمز ) مظفرآباد میں سب سے پہلے ایک سوالنامے کے تحت عطیہ خون دینے والوں کے خون کو مریض کے لیے محفوظ قرار دیا جاتا ہے۔ ادارہ میں عطیہ خون دینے والوں کو ضروری معلومات بھی فراہم کی جاتی ہیں ۔ مثلاً عطیہ خون کے بعد روز مرہ کے کاموں کی انجام دہی کی جا سکتی ہے ۔ تاہم بھاری مزدوری وغیرہ سے عطیہ خون کے روز اجتناب برتنا ضروری ہے ۔ انسانی جسم خون کے عطیہ کے باعث پیدا ہونے والی حجم کی کمی کو 24-48گھنٹوں میں پورا کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے ۔ جبکہ خون کے ذرات کی کمی 10-12ہفتوںکے اندر پوری ہو جاتی ہے ۔ ”آزاد جموں و کشمیر مرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “میں تعینات تربیت یافتہ عملہ عطیہ خون دینے والوں کو ضروری ہدایات فراہم کرتا ہے مثلاً زیادہ پانی یا مشروبات کا استعمال اور سگریٹ نوشی سے پرہیز وغیرہ ۔ عطیہ خون دینے کا عمل محض 10-15منٹ میں مکمل ہو جاتا ہے ۔ بعد ازاں بلڈ بیگ کو لیبل کیا جاتا ہے اور مریض کے لیے خون کو محفوظ بنانے کے لیے اسے پانچ بیماریوں کے لیے ٹیسٹ کیا جاتا ہے جن میں ہیپا ٹائٹس بی، ہیپاٹائٹس سی، ایڈز ، سفلس اور ملیریا شامل ہیں۔آزاکشمیرمرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “کے زیر اہتمام آزاد کشمیر میں پہلی بار عطیہ خون کو تین مریضوں کے لیے کارآمدبنانے کی سہولت موجود ہے ۔ چونکہ عموماً مریض کو خون کے کسی خاص جزو کی ضرورت ہوتی ہے ۔ مثلاً خون کے سرخ خلیے، پلازما اور خون جمانے والے ذرات۔ اس سہولت سے قبل مریض کے لواحقین کو خون کے اجزاءکے حصول کے لیے قریبی شہروں میں جانا پڑتا تھا۔ جسکی وجہ سے انہیں ذہنی و مالی پریشانیوں کا سامنا کرنا پڑتا تھا۔ علاوہ ازیں ©©”آزاد جموں و کشمیر مرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “ میں خون کے اجزءکو سٹور کرنے کے لیے عالمی معیار کی مشینری دستیاب ہے ۔ یوں تو تمام انسانوں کا خون دیکھنے میں ایک جیسا ہے ۔ تاہم انتقال خون کو محفوظ بنانے کے لیے مریض اور عطیہ خون دینے والے کے خون پر کچھ ٹیسٹ کرنا نا گزیر ہیں۔ جن کا مقصد مریض کے خون اور عطیہ خون دینے والے کے خون میں مطابقت پیدا کرتے ہوئے انتقال خون کے دوران مریض کو ری ایکشن سے محفوظ رکھنا ہے اگرچہ ©”آزاد جموں و کشمیر مرکزی سروس برائے محفوظ انتقال خون “ عوام الناس کے لیے مو¿ثر سہولیات فراہم کرنے کے لیے کوشاں ہے۔ تاہم رضا کارانہ عطیہخون کے فروغ اور مستقل بنیادوں پر محفوظ خون کی فراہمی ، سول سوسائٹی کی بھرپور سپورٹ کے بغیر ممکن نہ ہے ۔ لہذا اس مقصد کے تحت سول سوسائٹی کو اس سروس کا کارآمد بنانے کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہو گا۔

Address

Muzaffarabad
34100

Alerts

Be the first to know and let us send you an email when دستک Dastak posts news and promotions. Your email address will not be used for any other purpose, and you can unsubscribe at any time.

Contact The Business

Send a message to دستک Dastak:

Videos

Nearby media companies


Other Media/News Companies in Muzaffarabad

Show All

Comments

ملکی سطح کے بڑے پن بجلی منصوبے منگلا، نیلم جہلم، کوہالہ تو آزادکشمیر میں لگائے جا رہے لیکن مقامی حکومت کے ساتھ معاہدے نہیں کیے جا رہے جبکہ عوام بھی ان منصوبوں پر تحفظات کا اظہار کر رہے۔ دریا بچاو کمیٹی کا موقف جانیے سٹیٹ ویوز کے اس پروگرام میں https://m.facebook.com/story.php?story_fbid=856250184742586&id=181167645584180
صدر آزادکشمیرمسعود خان کو گرفتار کرنے کی خبروں نے ہلچل مچا دی۔ مسعود خان کے خلاف نیب کون سے کیسز پر تحقیقات کر رہا۔ تفصیلات کاشف میر کی اس رپورٹ میں